شہباز شریف، میاں نواز شریف کے ہر فیصلے کیساتھ ڈٹ کر کھڑے ہیں

Nawaz Sharif PMLN
کوئی جماعتی رکن پارٹی قیادت کی اجازت کے بغیر دفاعی حکام سے نہ ملے
September 24, 2020
maryam nawaz, maryam nawaz sharif,
گرفتاری شہباز شریف کی نہیں جنرل عاصم سلیم باجوہ کی ہونی چاہیے تھی: مریم نواز
September 28, 2020
Show all

شہباز شریف، میاں نواز شریف کے ہر فیصلے کیساتھ ڈٹ کر کھڑے ہیں

Rana sanaullah pmln youthwing

جیو کے پروگرام میں رانا ثنااُللہ خاں نے کہا کہ اگر ملاقاتوں کی بات چلے گی تو ۲۰۱۴ کے دھرنے سے شروع ہو گی اور الیکشن ۲۰۱۸ تک جائے گی کہ کس نے کب کب ملاقاتیں کیں اور لوگوں کو کہا گیا کہ ن لیگ نہیں پی ٹی آئی کے ٹکٹ ےسے  الیکشن لڑیں، جنوبی پنجاب محاز کس طرح بنا تھا ان کو بنی گالہ میں پٹے ڈالے گئے۔

ایک سوال کے جواب میں رانا ثنااُللہ نے کہا  ملاقاتوں کی خبر سے اے پی سی  کے فیصلوں کو کوئی دھچکہ نہیں لگے گا، ایک شخص جوخودکو گیٹ نمبر ۴  کا ترجمان بتاتا ہےخود کو خفیہ طاقتوں کا ایجنٹ بتاتا ہے اگروہ  بیچ چوراہے میں سیکورٹی سے متعلقہ معاملات کو پھوڑے گا توپھر یک طرفہ نہیں دوسری طرف سے بھی جواب آئے گا۔ اگر ایسا ہی ہے تو مولانا سے جو معاملات دھرنا ختم کرتے وقت طے ہوئے تھے وہ بھی حقائق بتائیں گے اور محمد زبیر بھی دوسری جانب کے حقائق بتائیں گے۔ یہاں ایم این ایز اور ایم پی ایز کو نامعلوم فون آتے ہیں کہ ہمیں آ کر ملیں۔

میاں شہباز شریف پر سوال کے جواب میں رانا ثنا اُللہ نے بتایا کہ شہباز شریف آن بورڈ ہیں اور میاں نواز شریف کے اے پی سی کے فیصلوں اور بیانئے سے سو فیصد متفق اور مطمئن ہیں میاں شہباز شریف کا موقف ہے کہ ملک میں موجودہ محاز آرائی نقصان دہ ہے اور اسے ختم ہونا چاہئیے اور سب کو مل کر چلنا چاہئیے پارٹی فیصلوں میں بحث مباحثے کیبعد جو فیصلہ ہوتا ہے میاں شہباز شریف نے ہمیشہ اُن کو نہ صرف تسلیم کیا بلکہ آگے بڑھ کر عمل درآمد بھی کیا۔

Leave a Reply